چور لٹیرے مل بیٹھے ہیں
چولی دامن ساتھ میں لے کر
باری باری تاش کے پتے
جوکر جوکر کرکے کھیلیں
شو کریں تو جیت نہیں
اور چھپائیں تو مات ہے کیسی
عدل کا پلڑا اس کا بھاری
َجس کے پیچھے دنیا ساری
کھیل ہے سارا لوٹوں کا
ہر اک بینگن پلیٹوں کا
رخ ہوا کا دیکھ کر چلتے
تیرے میرے سینے پر
مونگ کی دال وہ ہیں دلتے
کوئی نہیں ہے عام بندے کا
روحانی یا جسمانی مسیحا
جو بھی آئے لُوٹتا جائے
من بیاکل جان کر سب
ووٹ اسی کو پھر بھی پائے
اس قوم پر تف، لعنت اور ہائے